پاکستان بھر میں ڈینگی کے کیسز دن بہ دن سامنے آ رہے ہیں ایسے میں ضروری ہے کہ ہم احتیاطی تدابیر اختیار کریں اور خود کو مچھروں سے بچانے کی کوشش کریں، کیونکہ مچھروں کے کاٹنے سے آپ کو ملیریا، اور ڈینگی جیسی خطرناک بیماریاں بھی ہو سکتی ہیں۔

مچھر کے کاٹ لے تو آپ کس طرح جلن، تکلیف اور انفیکشن سے خود کو بچا سکتے ہیں آیئے ہم آپ کو بتاتے ہیں۔

مچھروں کے کاٹنے کے نقصانات سے خود کو بچانے کے چند طریقے

گرمیوں میں بارشوں کے بعد یا بدلتے موسم کے باعث مچھروں کی بہتات ہوجاتی ہے ایسے میں اگر مچھر آپ کو کاٹ لے تو اس جگہ پر برف سے ٹکور کریں اس سے جلن یا سوزش نہیں ہوگی اور نہ ہی دانہ بنے گا۔

ایلوویرا جلد کے لئے بہت بہترین ہے، اس کے استعمال سے جلد پر ہونے والی جلن اور سوزش کا خاتمہ ہوتا ہے ساتھ ہی اس میں اینٹی انفلامیٹری اور اینٹی بیکٹریل خصوصیات موجود ہوتی ہیں اس لئے اگر مچھر کے کاٹنے کی وجہ سے جلن یا تکلیف کا سامنا ہو تو اس جگہ پر ایلوویرا لگا لیں، نہ ہی انفیکشن ہوگا اور نہ ہی جلن یا تکلیف باقی رہے گی۔

شہد میں ایسی خصوصیات پائی جاتی ہیں جو آپ کی جلد کے لئے نےحد بہترین ثابت ہو سکتی ہیں، شہد میں بیکٹیریا سے لڑنے کے لئے خصوصی صلاحیت موجود ہوتی ہے یہ اینٹی فنگل، اینٹی انفلامیٹری اور اینٹی بیکٹیریل خصوصیات کا حامل ہوتا ہے مچھر جس جگہ کاٹے وہاں چند قطرے شہد لگا لیں اس سے جلن تکلیف دور ہوگی اور انفیکشن کا خطرہ نہیں ہوگا۔

تلسی کے پتے ہر گھر میں موجود ہوتے ہیں، اس میں کچھ ایسے کمپاؤنڈز موجود ہوتے ہیں جو سوزش کو دور کرنے میں مدد دیتے ہیں، مچھروں کے کاٹنے کے نقصانات سے بچنے کے لئے ایک کپ پانی میں 4 سے 6 تلسی کے پتے شامل کر کے اُبالیں پھر اس پانی میں روئی ڈبو کر جہاں جہاں مچھر نے کاٹا ہو وہاں لگا لیں کوئی نقصان کا اندیشہ باقی نہیں رہے گا۔

شیئر کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں