دیکھیں کہ کتنے گھر جو ہیں کس طرح سے اجڑ جاتے ہیں صرف میاں بیوی کی آپس میں لڑائی تو یاد رکھیں ۔ کہ اس لڑائی سے کوئی بھی فائدہ نہیں ہوتا ۔ جو آپس میں گھر ہو تے ہیں میں تو میاں سے بھی کہتا ہوں کہ دیکھیں وہ اپنے گھر بار بہن بھائی علاقہ چھوڑا گھر چھورا اپنا شہر چھوڑا صرف ایک تیری زبان کی خاطر آج اگر وہ تیرے گھر آئی ہے تو تو اس کی حفاظت کر اس کا جتنا بھی احترام کر ے گا وہ تیرے لیے کم ہے کیونکہ دیکھیں وہ تیرے گھر آ ئی ہے تیری ضرورت باورچی کی تھی وہ بھی تیری ضرورت ختم ہو گئی پھر تجھے ضرورت تھی بچوں کی ۔ بچوں کو سنبھالنا تھا وہ بھی اس نے آ نے والی نے دور کر دی پھر تیرے گھر کی کے باورچی خانےکا کام تھا۔

باورچی خانے کا کام بھی ختم کیا تو میرے بھائیوں دیکھیں جو آ پ کے گھر آ ئی ہے وہ آپ کی اہلیہ ہے وہ آپ کی عزت ہے وہ آپ کا احترام ہے آپ کی عزت ہے اس کا احترام کرنا آپ کے لیے بہت لازمی ہے بہت سارے آ تے ہیں اور کہتے ہیں کہ میرا شوہر جو ہے وہ میرے ساتھ صحیح نہیں رہ رہا مجھے ذہنی دباؤ میں رکھتا ہے لڑائی جھگڑا کر تا ہے اور اس کے سا تھ ساتھ مجھے گھر کا خرچ بھی نہیں دیتا تو مجھے کوئی ایسا وظیفہ بتائیے کہ جس سے یہ میرے تمام مسائل دور ہو جائیں اور میں اپنے گھر میں خوشحال ہو جاؤں شوہر بات نہیں مانتا جو میں کہتی ہوں۔ وہ ما نتا نہیں تو یاد رکھیں کہ وہ آپ کے لیے آئی ہے آپ کی عزت بن کر آئی ہے آپ کا اس کے اوپر احترام کرنا بہت لازمی ہےاصل اس کی وجو ہات یہ ہیں کہ شیطانوں کی بہت بڑی مجلس لگتی ہے اور شیطان جو بڑا شیطان ہوتا ہے وہ پو چھتا ہے کہ تو نے کیا کیا کو ئی کہتا ہے کہ میں نے فلاں بندے کو فلاں برائی کے اندر مبتلا کیا کوئی کہتا ہے کہ میں نے فلاں برائی کے اندر فلاں بندے کو مبتلا کیا کوئی کہتا ہے کہ میں نے جھوٹ بلوا یا کوئی کہتا ہے کہ میں نے فلاں سے چوری کروائی تو وہ جو بڑا شیطان شیطانوں کا سردار ہوتا ہے وہ خاموش بیٹھا رہتا ہے اور خاموشی سے سنتا رہتا ہے۔ ہر کسی کے برائی پر کہتا ہے۔

یہ تم نے کچھ بھی نہیں کیا پھر کوئی کہتا ہے کہ میں نے فلاں برائی کرو ائی تو وہ پھر بھی چپ بیٹھا رہتا ہے مگر جب شیطان کہتا ہے کہ میں نے شو ہر اور بیوی کی لڑائی کروائی تو وہ شیطانوں کا جو شیطا ن ہو تا ہے وہ اس پر اس کو داد دیتا ہے اور اپنے پاس بٹھا تا ہے اور اس کو شاباش دیتا ہے کہ یہ کام کیا ہے یہ کام کرنے والا ہے تم نے ساروں نے تو کوئی کام ہی نہیں کیا ہے

شیئر کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں