وہ شوہر جو اپنی بیوی کا حق ادا نہیں کرتے ۔ اپنی بیوی کا حق پور ا نہیں کرتے۔ اور اپنی بیوی کو ناجائز رلاتے ہیں ستاتے ہیں ان کو مارتے ہیں۔اور طلا ق کی دھمکی دیتے ہیں۔ تو اللہ پاک ان کے ساتھ کیا معاملہ فرماتا ہے جب بھی کوئی شخص اپنی بیوی کو ناجائز رلاتا ہے ستاتا ہے اور اسکا حق پورا نہیں کرتا ۔ تو حدیث پاک میں آتا ہے جس کا مفہوم ہے کہ اللہ تبار ک وتعالیٰ اپنے فرشتوں کو حکم دیتا ہے ۔ کہ فرشتوں جاؤ۔ اس شخص کے پاس جس نے اپنی بیوی کو ناجائز رلایا ہے۔ اپنی بیوی کو ستایا ہے اس کا حق پورا نہیں کرتا۔ اس کو پیار نہیں کرتا تو جاؤ اس شخص کے پاس اور اس سے یہ چیز چھین لے کرآؤ۔ اور وہ چیز ہے اللہ پاک فرماتا ہے اپنے فرشتوں کو ۔ اس کی روزی سے برکت چھین لو۔ اس کو تنگی دستی میں مبتلا کردو۔ اس کے گھر سے رحمت کو اٹھا لو ۔

اس شخص کی کوئی بھی فریاد، کوئی بھی دعا مجھ تک نہ پہنچاؤ۔ جب تک وہ شخص اپنی بیوی سے صلح نہیں کرلیتا۔ اپنی بیوی کو ناحق رلانا ختم نہیں کرسکتا۔ اپنی بیوی کا حق پورا کرنے کی کوشش نہ کرلیتا۔ تب تک اس کی کوئی بھی فریاد، اس کی کوئی بھی دعا مجھ تک نہ پہنچاؤ۔جب کوئی بھی شوہر اپنی بیوی کو ناجائز رلاتا ہے اسے ستا تا ہے اور اسے طلاق کی دھمکی دیتا ہے ۔ بیوی وہ شے ہے کہ رسول اکرم ﷺ نے فرمایا: دنیا میں تین چیزیں ایسی ہیں۔ جو مجھے بہت پسند ہیں۔

اور جو مجھے پسند ہے وہ میرے رب کو بھی پسند ہے ۔ اور وہ تین چیزیں ہیں۔ کہ پہلا نماز:نما ز مجھے بہت پسند ہے۔ اور دوسرا خوشبو۔ اور تیسری جو چیز ہے وہ نیک عورت یا نیک بیوی۔ جس چیز کو میرے آقا دو جہاں محمد مصطفی ٰ ﷺ نے پسند فرمایا ہے ۔ اس نعمت کی اگر ہم قدر نہ کریں۔ اور اس کی ناقدری کریں۔ تو اللہ پاک کس طرح ہم پر رح م کرے گا۔ کس طرح ہم اللہ سے اپنی گن اہوں کی معافی مانگیں گے ۔ تو ہمیں چاہیے کہ جو اپنی بیوی کے ساتھ حق تلفی کرتے رہے ۔

اسکا حق پور انہیں کرتے اس کا حق ادا نہیں کرتے۔ آپ کو چاہیے کہ اپنے بیوی کا جہاں تک ہوسکے اس کا حق پورا کرے ۔ اس کا حق ادا کرے ۔ اسے پیار کرے ۔ اور وہ میری بہن ہے جو اپنے شوہر کا حق پورا نہیں کرتیں۔ آپ سے بھی گزارش ہے کہ اپنے شوہر کا پورا حق ادا کریں۔ان کی بات سنیں۔ ان کی بات مانیں۔ انشاءاللہ آپ کی زندگی جنت ہوجائے گی۔ اللہ تعالیٰ ایسی برکت عطا فرمائے گا۔ آپ کی گھر میں ایسی رحمتیں نازل فرمائے گا۔ جس کا آپ تصور بھی نہیں کرسکتے۔ تو اللہ پاک ہم تمام کو اپنے محبوب بندوں میں شامل فرمائے۔ اور ہمیں وہ کام کرنے کی توفیق عطا فرمائے۔ جس کام سے اللہ پاک بہت خوش ہوتے ہیں۔

شیئر کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں