مردانہ قوت میں کمی اور مخصوص کمزوری کے مسائل سے دوچار مردوں کے لیے ایک بڑی خوشخبری آ گئی ہے۔اب انہیں اس کے لیے مہنگے ترین علاج کروانے کی ضرورت نہیں بلکہ سائنسدانوں نے ایک ایسا پھل بتا دیا ہے جو ان کے تمام مسائل حل کرکے ان کی ازدواجی زندگی کو خوشگوار بنا دے گا۔برطانیہ کی یونیورسٹی آف ایسٹ انجلیا کے سائنسدانوں نے اپنی تحقیق میں انکشاف کیا ہے

کہ ” منقا “باقی تمام پھلوں کی نسبت مرد کی مردانہ صحت کے لیے سب سے زیادہ مفید ہے اور اس کے تمام مردانہ مسائل کے حل کے لیے ضروری اجزاءکا حامل ہے۔اس میں مردانہ قوت کی کمی کو پورا کرنے اور ایستادگی میں اضافہ کرنے کی صلاحیت بلیک بیری سے بھی زیادہ ہے۔“برطانوی اخبار ڈیلی سٹار کی رپورٹ کے مطابق سائنسدانوں نے اپنی اس تحقیق کے لیے 25ہزار مردوں کی غذائی عادات کا 10سال تک معائنہ کیا اور اس نتیجے پر پہنچے کہ جو مرد بہتر ورزش کرتے ہیں

اور اپنی خوراک میں پھلوں کا استعمال زیادہ کرتے ہیں ان میں مردانہ صحت کے مسائل دوسروں کی نسبت کم پائے جاتے ہیں۔ اس دوران سائنسدانوں نے مختلف پھلوں کے مردانہ صحت پر اثرات کا بھی مطالعہ کیا

جس میں معلوم ہوا کہ اس حوالے سے سب سے زیادہ مفید منقا ہے۔ جو مرد باقاعدگی سے کسی بھی شکل میں منقا استعمال کرتے ہیں ان میں مردانہ کمزوری کے امکانات دوسروں کی نسبت10فیصد کم ہوتے ہیں۔یورالوجسٹ وجے سانگر نے ڈیلی سٹار سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ ”منقا میں باقی تمام پھلوں سے زیادہ اینتھوسایانین پایا جاتا ہے جو مرد کی مردانہ صحت کے لیے انتہائی مفید ہے۔اگر کوئی مرد مردانہ کمزوری کے مسئلے سے بچنا چاہتا ہے تو اس مرض کو ابتداءمیں ہی کنٹرول کرنا ہو گا اور اس کے لیے خوراک سے بہتر کوئی چیز نہیں۔

ایک طویل خوشگوار ازدواجی زندگی کے لیے مردوں کو روزانہ 5وقت پھل اور سبزیاں کھانی چاہئیں اور گوشت سے پرہیز کرنا چاہیے۔اس کے علاوہ روزانہ دن میں تین سے پانچ بار30منٹ تک ورزش کرنا بھی مردانہ صحت کے لیے انتہائی مفید ہے۔ جو چیز مذکورہ تمام چیزوں سے زیادہ اہم ہے وہ مردوں کا مردانہ طور پر متحرک رہنا ہے۔“واضح رہے کہ اس سے قبل ایک تحقیقاتی رپورٹ میں ماہرین کافی، کستورا مچھلی،پیاز اور کیلے کو بھی مردانہ صحت کے لیے بہت مفید قرار دے چکے ہیں۔

شیئر کریں